The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

ینگ پارلیمنٹرین نوجوانو ں کی ترقی اور فلا ح و بہبود کیلئے پالیسیاں وضع کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں،اسپیکر قومی اسمبلی … تجارت، زراعت، موسمیاتی تبدیلی، خزانہ، … مزید

8

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – این این آئی۔ 15 ستمبر2020ء) اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ اصلاحات لانے اور عوام کی فلاح و بہبود کے خواب کو حقیقت میں بدلنے کیلئے تحقیق پر مبنی قانوں سازی بہترین حل ہے، مقصد کے حصول کیلئے ینگ پارلیمنٹرین اہم کردار ادا کر سکتے ہیں، پاکستان کی 65فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے اور نو جو انو ں کی فلا ح وبہبود کے لیے نو جوان پا رلیمنٹر ینز کو پا لیسیا ں بنا نے کے لیے عملی اقداما ت اٹھانے کی ضرورت ہے۔ وہ منگل کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں ینگ پارلیمنٹرین فورم کے اجلا س کے شرکاء سے خطاب کررہے تھے ۔اسپیکر نے نوجوان پارلیمنٹرین کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے انہیں اپنے ا ہداف کا تعین کرنے اور ان کے حصول کیلئے واضح منصوبہ بندی کے ذریعے کام کرنے کا کہا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ پارلیمانی اور قائمہ کمیٹیاں قانون سازی کیلئے بہترین فورم ہیں اور ان فورمز پر نوجوان پارلیمنٹرین اپنی صلاحیتوں کو بروے کار لا کر موثر قانون سازی میں اپنا کردار ادا کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں زراعت کے شعبے کی ترقی اور افغانستان کے ساتھ تجارت میں اضافے کو فروغ دینا اٴْن کی اولین ترجیح رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ زراعت پر قائم کمیٹی کی 80فیصد سفارشات پر عمل درآمد کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک۔افغان دوستی گروپ کی ایگزیکٹیو کمیٹی کی سفارشات پر عملدآمد سے پاک،افغان تجارت میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے میں مدد ملی ہے اور دوطرفہ تجارت کو فروغ حاصل ہوا ہے۔ اسپیکر قومی اسمبلی نے نوجوان پارلیمنٹرین کو ایوان کی کاروائی میں حصہ لینے کے لیے اپنے ہرممکن تعاون کا یقین دلایا۔ انہوں نے ینگ پارلیمنٹرین فورم کے اراکین کو بھرپور تیاری کے ساتھ ایوان کی کارروائی میں شرکت کرنے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ تجارت، زراعت، موسمیاتی تبدیلی، خزانہ، تعلیم اور سی پیک پر قائم کمیٹیوں کو مزید فعال بنانے کے لیے بھرپور توجہ دی جارہی ہے اور ان کمیٹیوں کے کردار کو مزید موثر بنانے کے لیے تھنک ٹینکس اور ریسرچرز کی مدد لینے پر غور کیا جارہا ہے۔ اسپیکر اسد قیصر نے ینگ پارلیمنٹرین پر قواعد و ضوابط پر مکمل عبور اور ایجنڈے پر موجود نکات سے مکمل معاملات اورآ گاہی حاصل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔اس موقع پر بات کرتے ہو ئے ینگ پارلیمنٹرین کے صدر ممبر قومی اسمبلی شاہد خٹک نے حصہ لینے کے لیے انہیں مکمل تعاون کی یقین دہا نی کرانے پر سپیکر کا شکریہ ادا کیا انہو ں نے کہا کہ نو جو ان پا کستان کا اثاثہ ہیں اور نو جو ان پارلیمٹیرین کو نوجوانو ں میں مثبت تبدیلیاں لا نے کے لیے سخت محنت اور یک سوئی کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت ہے۔سیکرٹرجنرل ینگ پارلیمنٹرین فورم عظمہ ریاض نے پاکستان انسٹیٹیوٹ آف پارلیمنٹری سروسسز اور شعور فاونڈیشن برائے تعلیم و آگاہی کے تعاون سے شروع کیے گئے پروجیکٹ، ہم آہنگ فار رائیٹ کے اغراض و مقاصد سے فورم کے شرکاء کو آگاہ کیا انہو ں نے نوجوان پارلیمنٹرین کی قانون سازی میں استداد کار میں اضافے کے لیے تکنیکی معاونت کی فراہمی کے بارے میں بھی فورم کو آ گاہ کیا اس موقع پر اجلاس میں شریک ینگ پارلیمنٹرین کے ارکین نے فورم کو مزید مستحکم اور فعال بنا نے کے لیے اپنی تجاویز دیں۔ اجلاس میں اراکین قومی اسمبلی شاندانہ گلزار خان ، ڈاکٹر شازیہ صوبیہ، رائے محمد مرتضیٰ اقبال، منورہ بلوچ، کنول شہزاد، چوہدری شوکت علی، ناصر خان مزاری، شیزعہ فاطمہ او سید شمعون ہاشمی ایڈیشنل سیکرٹری قومی اسمبلی، ایگزیکٹو ڈائریکٹر پیپس ظفراللہ خان اور شعور فاونڈیشن کے ایگزیکٹوڈائریکٹر نے شرکت کی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More