The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

ہائی پروفائل مقدمات کے ملزموں کو ٹریس کرکے گرفتاری میں معاونت کرنے والے حساس ادارے کے افسر کودھمکیاں ،افسر نے آبپارہ پولیس کو تحریری درخواست دے دی

9

جمعرات ستمبر
04:05

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 17 ستمبر2020ء) ہائی پروفائل مقدمات کے ملزموں کو ٹریس کرکے گرفتاری میں معاونت کرنے والے حساس ادارے کے افسر کو پڑوسی ملک کے موبائل نمبروں سے مختلف اوقات میں دھمکیاں ملنے کا انکشاف ہوا ہے۔ حساس اداے کے افسر راجہ راحت نے آبپارہ پولیس کو تحریری درخواست دیتے ہوئے مؤقف اختیار کیا کہ میں حساس ادارے میں خدمات سرانجام دے رہا ہوں، کافی دنوں سے میرے ذاتی نمبروں پر مختلف اوقات میں کالز آتی ہیں، ایسا معلوم ہوتا ہے کہ کال کرنے والا مجھے خوفزدہ اور ہراساں کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ قبل ازیں میں حساس ادارے سے اسلام آباد میں پولیس میں آیا اور اسلام آباد پولیس میں انچارج ہائی پروفائل کرائم یونٹ اسلام آباد خدمات سرانجام دے چکا ہوں۔

(جاری ہے)

اس دوران میں نے ہائی پروفائل کیس ٹریس کرکے ملزموں کو گرفتار کرایا، قوی امکان ہے کہ مجھے کی جانے والی کالز اس سلسلے کی کڑی ہو سکتی ہے، میں اور میری فیملی اس وجہ سے خوفزدہ ہے، میں نے اپنے دفتر کے افسران کو بھی آگاہ کر دیا ہے۔

آبپارہ پولیس نے اس حوالے سے رپورٹ درج کر لی ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حساس ادارے کے افسر کو کی جانے والی کالز پڑوسی ملک کے نمبروں سے آ رہی ہیں تاہم ابھی تک پولیس کی جانب سے مقدمہ درج نہیں کیا جا سکا۔ معاملہ کی تفتیش کرنے والے اے آئی ایس طلحہ کا کہنا ہے کہ سی ڈی آر کے لئے کہا ہوا ہے کارروائی جاری ہے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More