The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

کمشنرنصیرآباد عابدسلیم قریشی کا ضلع جھل مگسی کے سیلاب زدہ علاقوں کادورہ‘ ریلیف کے کاموں کا جائز لیا

17

اتوار ستمبر
23:15

کوئٹہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 13 ستمبر2020ء) کمشنرنصیرآباد عابدسلیم قریشی نے ضلع جھل مگسی کے سیلاب زدہ علاقوں کادورہ کرکے ریلیف کے کاموں کا جائزہ لیا اور ضلعی انتظامیہ کی جانب سے سیلاب متاثرین کیلئے کئے گئے اقدامات کو تسلی بخش قراردیا‘ سیلاب متاثرین کی ہرقسم کی امداد کو یقینی بنایا جائے تاکہ عوام کی مشکلات اورمسائل کاازالہ ہوسکے‘ راشن خیمے،اور فری میڈیکل کیمپس کے انعقاد میں مزید تیزی لائی جائے تاکہ سیلاب زدگان کی خوراک اور ادویات کی مشکلات ختم ہوسکیں‘ حکومت سیلاب متاثرین کیلئے ہرممکن وسائل بروئے کارلارہی ہے تاکہ ان مشکل حالات میں اپنے مصیبت زدہ بھائیوں کو امداد مل سکے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر جھل مگسی ڈاکٹرشرجیل نورنے انہیں ضلع بھرمیں سیلابی صورتحال اور متاثرہ علاقوں کے متعلق کمشنرنصیرآباد کو تفصیل سے آگاہی فراہم کی انہوںنے بتایا کہ حالیہ سیلاب سے گنداواہ نوتال روڈمتاثر ہواہے جبکہ میرپور،ہتھیاری،مٹ سندھر،سیف آبادکے علاقے بھی متاثرہوئے ہیں سیلاب متاثرین میں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ٹینٹ،راشن،اور دیگر ریلیف کی اشیاء فراہم کی جاچکی ہیں جبکہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں سیف آباداور شمبھانی میں فری میڈیکل کیمپس قائم کئے گئے ہیں جہاں روزانہ کی بنیادپر سیلاب متاثرین میں ادویات فراہم کی جارہی ہیں اس موقع پراسسٹنٹ کمشنر عقیل کریم بلوچ،ایکسین بی اینڈآر حامدبنگلزئی،تحصیلدارہادی بخش پہوڑ بھی ان کے ہمراہ تھے کمشنر نصیرآباد عابد دسلیم قریشی نے ڈپٹی کمشنر کو احکامات دیئے کہ بحالی کے کاموں میں کوئی تاخیر نہ کی جائے روڈ نیٹ ورک سمیت دیگر کاموں کو ہنگامی بنیادوں پرپورا کیا جائے اورسیلاب سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لینے کیلئے کمیٹی بنائی جائے تاکہ نقصان کے متعلق جلد ازجلد رپورٹ مرتب کرکے صوبائی حکومت کو ارسال کی جاسکے صوبائی حکومت سیلاب سے متاثرہ لوگوں کی ہرممکن امداد کیلئے ٹھوس اقداما ت کررہی ہے تاکہ لوگوں کی مشکلات کو حل کیا جاسکے ۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More