The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

کراچی میں غیر قانونی عمارتیں بنانے میں مافیا ملوث ہے، حلیم عادل شیخ

18

کراچی۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 13 ستمبر2020ء) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے رہنما و رکن صوبائی اسمبلی حلیم عادل شیخ نے کہا کہ ہے کرچی میں ناجائز تجاوزات قائم کی گئی ہے جس کی وجہ سے حادثات رونما ہورہے ہیں ، 12سالوں سے کراچی میں غیر قانونی تجاوزات کہ جارہی ہیں کوئی روکنے والا نہیں،سندھ حکومت جعلی تعمیرات کرانے والوں کہ سرپرستی کر رہی ہے، غیرقانونی عمارتیں بنانے میں مافیا ملوث ہے ۔ جاری اعلامیہ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو لیاری کے علاقہ کوئلہ گودام کے قریب عمارت گرنے کی جائے واقوعہ پر پہنچ کے بعد گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ حلیم عادل شیخ نے جائے وقوعہ کا دورہ کر کے متاثرین سے ملاقات کر کے تفصیلات معلوم کی اور ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے ہر ممکن تعاون و مدد کی یقین دہانی کرائی۔

(جاری ہے)

حلیم عادل شیخ نے کہا کہ جس نے بھی یہ غیر قانونی تجاوزات قائم کی ہیں ان کے خلاف کاووائی کی جائیں، غیر قانونی تعمیرات ، چائنا کٹنگ میں کوئی بھی ملوث ہو ان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔

حلیم عادل شیخ نے مزید کہاکہ میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اور گورنر سندھ عمران اسماعیل کا شکر گزار ہوں جنہوں نے سیلاب متاثرین کا درد سمجھا اور امداد کی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری سندھ حکومت کی نااہلی چھپانے کے لئے وفاق پر تنقید کر رہے ہیں۔ 18ویں ترمیم کے بعد تمام تر ذمہ داری سندھ حکومت کی ہے۔ حلیم عادل شیخ نے کہا کہ سیلاب متاثرہ علاقوں میں ایک لاکھ راشن بیگ گورنر پنجاب و گورنر سندھ کی جانب سے تقسیم کیے جارہے ہیں۔ ٹینٹ این ڈی ایم اے کی جانب سے دیئے جارہے ہیں۔ دس ہزار راشن بیگ و دیگر سامان یو اے ای کے شیخ خلیفہ بن زاید النہیاں فائونڈیشن کی جانب سے تقسیم کیا جارہا ہے۔ تمام سامان بغیر کسی تفریق کے سیلاب متاثرین میں تقسیم کیا جارہا ہے۔رہنماء تحریک انصاف نے کہا کہ وفاق نے کورونا وباء میں بھی سندھ کی عوام کو اکیلا نہیں چھوڑا ، سندھ کی عوام میں ساٹھ ارب روپے تقسیم کئے گئے اور اب بھی وفاق متاثرین کی مدد کرے گا۔انہوں نے کہا کہ بلاول کو اب ہیلی کاپٹر سے اتر کر عوام میں جاکر ان کی مدد کرنی چاہئے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More