The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

چیف جسٹس پاکستان محکمہ پولیس سے واجبات دلانے میں کردار ادا کریں،محمد یوسف

13

بدھ ستمبر
21:29

پشاور۔16 ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 16 ستمبر2020ء) کوٹ اطلس خان سرائے نورنگ ضلع لکی مروت کے رہائشی محمد یوسف نے کہا ہے کہ وہ ضلع بنوں پولیس میں بطور سپاہی1975 سے خدمات انجام دے رہے تھے کہ سال 17دسمبر 1985کو ان کے والد کا قتل ہوا، جس کی ایف آئی آر تھانہ نورنگ درج ہے، والد کے قتل کے بعد مخالفین نے پولیس ریکارڈ سے میری فائل غائب کرادی اور بعد آزاں 28دسمبر 1988کو مجھے محکمہ پولیس کی ملازمت سے برطرف کردیا گیا ،پشاور پریس کلب میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس برطرفی کو میں نے میں نے چیلنج کیا ،ٹریبونل نے میری اپیل پر پولیس سے میری برطرفی کو جبری ریٹائرمنٹ میں تبدیل کرتے ہوئے محکمے کو میرے واجبات ادا کرنے کا حکم دیا ،جس پر طویل عرصے کے بعد 2016 میں عملدرآمد ہوا اور مجھے پنشن مل گیا ۔

(جاری ہے)

اطلس خان نے کہا کہ چونکہ محکمے نے مجھے جبری طور پر ملازمت سے فارغ کیا تھا،لہذا چیف جسٹس آف پاکستان اور وزیر اعظم عمراں خان سے اپیل ہے کہ مجھے محکمہ پولیس سے 60سالہ واجبات دلا نے میں اپنا کردار ادا کریں ۔انہوں نے کہا کہ مخالفین کی سازش کا شکار ہو کر اپنی نوکری سے محروم ہوگیا اور اب 64سال کی عمر میں میرے پاس روزگار کا کوئی زریعہ نہیں ہے لہذا محکمہ پولیس سے مجھے تمام مراعات اور مکمل پنشن دلایا جائے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More