The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

چیئر مین سینٹ نے قومی اسمبلی سے منظوری کے بعد فوجداری قانون ترمیمی ایکٹ 2020 متعلقہ کمیٹی کے سپرد کر دیا

8

منگل ستمبر
21:45

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – این این آئی۔ 15 ستمبر2020ء) چیئر مین سینٹ نے قومی اسمبلی سے منظوری کے بعد فوجداری قانون ترمیمی ایکٹ 2020 متعلقہ کمیٹی کے سپرد کر دیا ۔ منگل کو قومی اسمبلی سے منظوری کے بعد فوجداری قانون ترمیمی ایکٹ 2020 پیش کر نے کی تحریک پی ٹی آئی کے چیف وہیپ سجاد طوری نے پیش کی۔پاکستان پیپلزپارٹی کی جانب سے بل ہیش کرنے کی تحریک کی مخالفت کی گئی ۔رضا ربانی نے کہاکہ بل اب سے دس منٹ قبل قومی اسمبلی سے بلڈوز ہو کر سینیٹ آیا ہے،نہیں سمجھ میں آتا کیسے پانچ منٹ میں قومی اسمبلی نے سینیٹ کو بھیجا اور پانچ منٹ میں سینیٹ میں ضمنی ایجنڈا پر بل پیش کر دیا گیا ،یہ ایف اے ٹی ایف سے متعلق بل ہے ،اس طرح حکومت پارلیمنٹ کو بے توقیر کرنا چاہ رہی ہے،قومی اسمبلی میں بل نوے سیکنڈ میں منظور ہوا۔

(جاری ہے)

رضا ربانی نے کہاکہ کہا گیا کہ اگر بِل پاس نہ ہوئے تو فیٹف کا مسئلہ کھٹائی میں پڑ جائیگا،دس دن گزر گئے ابھی تک جوائننٹ سیشن کی تاریخ تک نہیں آئی،ان کے پاس وقت اگر ہے تو دونوں ہاؤسز کو بے توقیر کرنا کہاں لکھا ہوا ہے،ایک دن میں کوئی فرق نہیں پڑے گا لیکن پارلیمان کو بے توقیر کرنے کی روایت نہ بڑھائی جائے،ویسے تو صدارتی نظام کی بھی باتیں ہو رہی ہیں اس ہاؤس کو شیم ہاؤس بہ بنایا،چیئرمین سینیٹ نے بل ایوان میں پیش کرنے کی منظوری دیدی ، چیئرمین سینیٹ نے بل متعلقہ قائمہ کمیٹی کو بھجوا دیا۔ بعد ازاں سینیٹ کا اجلاس (آج) بدھ کی صبح ساڑھے دس بجے تک ملتوی کر دیا گیا

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More