The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

پھانسی نیا انٹرٹینمنٹ ہوگا،یہ توجہ ہٹانےکاپراپگینڈا ہے … پھانسی سے جرائم مزید بڑھتے ہیں،ماضی میں یہ روایت پڑی تھی جس سے اعداد شمار میں اضافہ ہوا تھا کم نہیں ہوئے تھے … مزید

13


Live Updates

پھانسی سے جرائم مزید بڑھتے ہیں،ماضی میں یہ روایت پڑی تھی جس سے اعداد شمار میں اضافہ ہوا تھا کم نہیں ہوئے تھے ، شیریں رحمان

منگل ستمبر
22:53

اسلام آباد(اردو پوائنٹ- اخبارتازہ ترین 15ستمبر2020ء) سینٹر شیریں رحمان کا کہنا ہے کہ سرعام پھانسی ایک نیا انٹرٹیمنٹ شو ہو گا،پھانسی دینے کی وجہ سے جرائم کے اعداد شمار میں اضافہ ہوتا ہے، ماضی میں تاریخ اس کی گواہ ہے ، سینٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئےشیریں رحمان کا کہنا تھا کہ ملک میں قانون کو لاگو کیا جانا چاہیے، اصل مجرم تھانے میں نہیں ہے اصل مجرم کو تو لائیں پھربات کریں ، انھوں نے کہا کہ ضیاء الحق کے دور میں سرعام پھانسی دی جاتی تھی ، 5 لاکھ افراد پھانسی کا شو دیکھنے کے لیے امڈ آتے تھے لیکن جرائم میں کیا کم واقع ہوئی ؟ ان کا کہنا تھا کہ اس دور میں زیادہ جرائم سرزد ہونے لگے تھے ، گھر گھر میں عدالت لگ جاتی رہی ہے۔لیکن جرائم میں کمی نہیں ہوئی ،ان کا مزید کہنا تھا کہ پی پی پی زیادتی کیس میں مجرمان کی حمایت نہیں کرتی انہیں سخت سے سخت سزا دینی چاہیے، لیکن یہ طریقہ کار نہیں ہے، ،مجرم پکڑا نہیں ہے اور سزائیں مختص کی جارہی ہیں، انکا مزید کہنا تھا کہ سزا ان کو ملنی چاہیے جن کایہ کہنا تھا کہ خواتین رات کوباہر کیوں نکلتی ہیں، سزاء ا نکو ملنی چاہیے جنہوں نے موٹروے سانحہ میں بروقت کاروائی عمل میں لانے کی زحمت نہیں کی تھی ، خواتین کیوں نہ گھر سے نکلیں ، زیادتی مرد کرتے ہیں تو انہیں گھر میں رہنے کی ضرورت ہے۔

(جاری ہے)

مزید برآں ان کا کہنا تھا کہ پی پی پی نے جمہوریت کے لیے قربانیاں دی ہیں وہ ملک میں ایسے کسی بھی قانون کی حمایت نہیں کرتیں جو کہ ایک شو کے علاوہ کچھ نہیں ہے ،یہ ما سوائے مقدمے سے توجہ ہٹانےچال ہے اور ملک میں آمر کی اصلاحات کو نافذ کرنے کا عمل ہے۔ خیال رہے کہ ملک میں بڑھتے ہوئے زیا دتی کیسز کی وجہ سے سرعام پھانسی اور مرد کو کیمائی مواد سے نامرد کرنےکی ہوا چل رہی ہے ،جبکہ وزیر اعظم نے بھی ان اقدامات اور قوانین کی حمایت کی ہے ۔    



موٹروے پر خاتون کے ساتھ زیادتی سے متعلق تازہ ترین معلومات

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More