The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

پاکستان پرتگال کے سفارتی تعلقات کو مزید بہتر کیا جائے تاکہ کمیونٹی کے مسائل حل ہو سکے … فارن آفس پاکستان سے تصدیق شدہ دستاویزات کی دوبارہ تصدیق کرنے کی کوئی پالیسی نہیں، … مزید

13

لزبن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 ستمبر2020ء،نمائندہ خصوصی،مہوش ظفر) پرتگال سفارتخانہ اسلام آباد میں فیملی ویزا کی درخواست جمع کروانے والے پرتگال میں مقیم پاکستانیوں کے لیے مشکلات میں مزید اضافہ بڑھ گئی۔
فیملی ری یونفقیشن ویزا درخواست جمع کروانے کے لیے تمام دستاویزات جو پاکستان فارن منسٹری ، پرتگال فارن منسٹری اور سفارتخانہ پاکستان لزبن سے تصدیق شدہ ہے ان دستاویزات کی پاکستان فارن منسٹری کی جانب سے تصدیق کیے جانے کی تاریخ سے 180 دنوں تک کی معیاد گزر جانے کے بعد سفارتخانہ پرتگال کی جانب سے قابل قبول نہیں سمجھا جا تا اور فارن آفس پاکستان ایک دفعہ تصدیق شدہ دستاویزات کو دوبارہ تصدیق نہیں کرتا۔

(جاری ہے)

جب کے پاکستان میں نکاح نامہ ، فیملی رجسٹریشن سرٹیفکیٹ اور برتھ سرٹیفکیٹ نادرا یا یونین کونسل سے ایک بار ہی جاری کئے جاتے جن کی میعاد ختم ہونے کی تاریخ بھی درج نہیں ہوتی
180 دن گزر جانے کی سب سے بڑی وجہ اسلام آباد میں پرتگال سفارتخانہ کی بندش اور وقت پر درخواست جمع کروانے کی تاریخ نہ ملنا ہے
درخواست گزار سفارتخانہ پرتگال اور جیری اسلام آباد کو درجنوں ای میلیز اور فون کرتے رہتے ہے مگر بدقسمتی سےکم لوگوں کو تاریخ ملتی ہے کچھ حضرات جو جیری اسلام آباد کے باہر ایجنٹ مافیا کے زریعے 25 ہزار یا 30 ہزار رشوت دے کر فوری تاریخ حاصل کر لیتے ہے
جبکہ پرتگال میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کی جانب سے پاکستان سفارتخانہ لزبن اور فارن آفس پاکستان کو سوشل میڈیا ، پرنٹ میڈیا ، اور ملاقاتیں کر کے ان تمام مسائل سے آگاہ کیا گیا ہے
لیکن ابھی تک پرتگال سفارتخانہ مکمل بحال نہ ہو سکا اور نہ ہی فیملی ویزا کیسیز جن کے پاس سیف سے جاری شدہ لیٹرز موجود ہے ان کو تاریخ ملنے میں دشواری ہے جس وجہ سے دستاویزات کی میعاد ایک سال سے بھی زائد ہو جاتی ہے
جبکہ یہ تمام دستاویزات دوبارہ بنانے پر اورسیز پاکستانیوں اور ان کے خاندان کو بے حد مشکلات کا سامنا ہے
جبکہ کورونا لاک ڈاؤن کے دوران پاکستان میں پھنسے ہوئے پاکستانی جن کے ویزا یا کارڈز کی میعاد ختم ہو چکی ہے ان کے لیے ابھی تک کوئی واضع پالیسی موجود نہیں ، پاکستان سفارتخانہ کی جانب سے سفارتخانہ کی فیس بک پیج پر ایک لیٹر پوسٹ کیا گیا تھا کہ جس میں پرتگال اتھارٹی سیف نے جن پاکستانیوں کی کورونا لاک ڈاؤن میں ویزا کی میعاد ختم ہے ان کو 30 اکتوبر تک پرتگال کےلیے سفر کرنے کی اجازت ہے مگر پاکستان میں آئیر پورٹ احکام اور ایف آئی اے اس لیٹر کو نہیں مان رہے جبکہ پرتگال سفارتخانہ اسلام آباد کی جانب سے ایسے حضرات کے لیے کوئی نرمی نہیں دی جا رہی انہیں دوبارہ سے ویزا پراسس شروع کرنے کا کہا گیا ہے جو ایک انتہائی لمبا ،مشکل اور کچھ افراد کےلیے ناممکن کام ہے کیونکہ وہ حضرات پرتگال میں موجود ہی نہیں جبکہ تک وہ افراد پرتگال نہیں آئے گے تو کیسے فیملی کے لیے دوبارہ پراسس شروع کر سکے گے
پرتگال میں مقیم پاکستانی اورسیز کمیونٹی اور مختلف پاکستانی تنظیموں نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور سیکرٹری خارجہ پاکستان سے اپیل ہے کہ ان مسائل کا فوری حل کیا جائے

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More