The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

ْسی سی پی او کے ریمارکس کی مذمت کرتا ہوں، لاہور واقعہ کے مجرموں کو عبرتناک سزا ملنی چاہیے، پاکستانی خواتین پر فخر ہے جنہوں نے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا، اپنے حقوق کے … مزید

16

سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم کا اظہارخیال

منگل ستمبر
22:35

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 15 ستمبر2020ء) سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم نے کہا ہے کہ سی سی پی او کے ریمارکس کی مذمت کرتا ہوں، لاہور واقعہ کے مجرموں کو عبرتناک سزا ملنی چاہیے، پاکستانی خواتین پر فخر ہے جنہوں نے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا اور اپنے حقوق کے لئے جدوجہد کی، سیاسی مداخلت نے پولیس کو تباہ کیا۔ منگل کو ایوان بالا میں لاہور واقعہ پر اظہار خیال کرتے ہوئے قائد ایوان سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم نے کہا کہ ارکان نے جن جذبات کا اظہار کیا ہے، میرے بھی ایسے ہی جذبات ہیں، اگر جذبات کو درمیان سے نکال دیا جائے تو بے حسی بچتی ہے، اس واقعہ نے معاشرے کی کئی جہتوں کو بے نقاب کیا ہے اور خرابیاں سامنے آ گئی ہیں، کسی بھی معاشرے میں خاتون کے مقام سے اس معاشرہ کو پرکھا جا سکتا ہے، ہمیں اپنی خواتین پر فخر ہے، جنہوں نے نامساعد حالات کے باوجود اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا اور اپنی جدوجہد جاری رکھتے ہوئے اپنے حقوق منوائے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ پولیس کوئی ایسا ادارہ نہیں جس پر ہم فخر کر سکیں، یہ کام دو سالوں میں نہیں ہوا، سیاسی مداخلت نے اس ادارے کو تباہ کیا، رائو انوار، عابد باکسر جیسے کرداروں کی پرورش کی گئی، سی سی پی او کے ریمارکس کی تائید نہیں کی جا سکتی، میں بھی ان کی مذمت کرتا ہوں۔ خواتین کو کسی زیادتی کی صورت میں کہا جاتا ہے کہ وہ خاموش رہیں تاکہ عزت پر حرف نہ آئے۔ انہوں نے کہا کہ متاثرہ شخص یا خاتون واقعہ پولیس کو رپورٹ کرتے ہوئے کرب اور دبائو سے گزرتا ہے، جیلیں مجرموں کی نرسریاں بن چکی ہیں، ایسے واقعات کے مجرموں کی سزا عبرتناک ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ارکان اس واقعہ کے حوالے سے اپنی تجاویز دیں۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More