The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

مصنوعی نسل کشی کے پائیدار طریقہ سے جانوروں کی نسلوں کو محفوظ اورکارآمد بنایاجاسکتا ہے

11

جمعرات ستمبر
14:08

فیصل آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 17 ستمبر2020ء) لائیو سٹاک اور ڈیری ڈویلپمنٹ ڈاکٹر محمود اختر نے کہا ہے کہ مصنوعی نسل کشی ہی وہ محفوظ طریقہ کار ہے جس سے جانوروں کی نسلوں کو محفوظ اورکارآمد بنایاجاسکتا ہے۔ اے پی پی سے بات چیت کے دوران انہوںنے بتایا کہ اس سے ان کی پیداواری صلاحیتوں میں اضافہ کیا جاسکتا ہے جبکہ مویشی پال حضرات کی سہولت کیلئے ویٹرنری ہسپتالوں میں آنے والے جانوروں کے ساتھ ساتھ لائیو سٹاک فارمرز کے گھروں میں موجود جانوروں کو حفاظتی ٹیکہ جات اور علاج معالجہ کی سہولیات کی فراہم کر رہے ہیں۔ اس ضمن میں محکمہ لائیو سٹاک کے متعلقہ عملہ سے کہا گیا ہے کہ وہ ویٹرنری ہسپتالوں اور ڈسپنسریز میں آنے والے جانوروں کے ساتھ ساتھ مویشی پال حضرات کے گھروں میں موجود جانوروں کے حفاظتی ٹیکہ جات اور علاج معالجہ کی سہولیات کو یقینی بنایا جائے تاکہ مویشی پال حضرات زیادہ سے زیادہ ان سہولیات سے مستفیدہوسکیں اور جانوروں کی پیداوار میں اضافہ کرکے ملکی معیشت کی ترقی میں اپنا فعال کردار ادا کرسکیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ۔انہوں نے کہا کہ نان رجسٹرڈ مصنوعی نسل کشی کرنے والے حضرات کے خلاف کارروائی کے عمل کو تیز کیا جا رہا ہے اور رجسٹرڈ سیمن کے استعمال کویقینی بنانے کی ہدایت کی جا رہی ہے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More