The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

لورالائی، سگھر بائی پاس تک سڑک کی منظوری کے باوجود کام شروع نہ ہو سکا، شہریوں کا نوٹس کا مطالبہ

5

بدھ ستمبر
17:57

لورالائی۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 16 ستمبر2020ء) لورالائی مولوی آغامحمد مدرسے لیکر سگھر بائی پاس تک سڑک کی منظوری کے باوجود کام اب تک شروع نہیں ہوا جس سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے سٹیزن ایکشن کمیٹی لورالائی کی نمائندہ تنظیم ہے جنہوں نے وفاقی محتسب میں کیس کیا تھا کئی ماہ کے بعد ہمارے حق میں فیصلہ ہوا ۔

(جاری ہے)

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سٹیزن ایکشن کمیٹی لورالائی کے چیئرمین محمد اخلاص حمزہ زئی نے کہا کہ اس روڈ کا ٹینڈر گذشتہ ماہ 19اپریل کو لاہور میں ہوا اور کرونا کے وجہ سے بروقت کام شروع نہ ہوسکا اب تمام کمپنیوں نے کام شروع کیا ہے لیکن لورالائی شہر کے سات کلو میٹر روڈ پر تاحال کام شروع نہیں کیا جارہا ہے اسمیں تاخیری حربے استعمال کیئے جارہے ہیں اس حوالے سے کمشنر ژوب ڈویژن ،ڈپٹی کمشنر لورالائی اور این ایچ اے لورالائی کا ٹھیکدار کام شروع کرنے میں بے بس نظر آرہے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم جلد سٹیزن ایکشن کمیٹی لورالائی کے پیلٹ فارم سے سیاسی جماعتوں مرکزی انجمن تاجران اور سول سوسائٹی کا مشترکہ اجلاس بلا کر پہلے مرحلے میں شٹرڈوان ہڑتال اور پہیہ جام ہڑتال کریں گے جس میں کوئٹہ روڈ،ڈی جی خان روڈ ،دکی سنجاوی روڈ کو ہر قسم ٹریفک کیلئے بند کریں گے جس پر ہر قسم کے ٹریفک بند ہونگے اس میں ٹرانسپو رٹ والے بھی ہمارے ساتھ ہو نگے انہوں نے نیشنل ہائے وے اتھارٹی کے اعلی ٰ احکام سے مطالبہ کیاکہ ٹھیکدار کو پابند کریں کہ وہ جلد روڈ پر کام شروع کرنے کا آغاز کریں ورنہ دوماہ کے بعد سردی شروع ہو رہی ہے اسمیں کام ناممکن ہے اور ایک طریقے سے ھیکدار کو بھی ایک بہانا اور مل جائیگا کہ اب سردی ہے اور کام ممکن نہیں لہذا فوری طور پر کام اب شروع کیا جائے شارٹ کٹ سڑک ہے اور کم وقت ہی میں سارا کام مکمل ہو سکتا ہے

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More