The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

لاہور واقعہ کے بعد لائحہ عمل کے لئے کمیٹی آف دی ہول کا اجلاس بلایا جائے، کمیٹی میں پولیس کے نیک نام افسر اور ریٹائرڈ یا حاضر سروس ججز کو بھی بلایا جائے، سب سے اہم معاملہ … مزید

16

سینیٹ میں قائد حزب اختلاف سینیٹر راجہ ظفر الحق کی تجاویز

منگل ستمبر
22:35

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 15 ستمبر2020ء) سینیٹ میں قائد حزب اختلاف سینیٹر راجہ ظفر الحق نے تجویز دی ہے کہ لاہور واقعہ کے بعد لائحہ عمل کے حوالے سے مشاورت کے لئے کمیٹی آف دی ہول کا اجلاس بلایا جائے، کمیٹی آف دی ہول میں پولیس کے نیک نام افسر اور ریٹائرڈ یا حاضر سروس ججز کو بھی بلایا جائے، سب سے اہم معاملہ تھانہ کلچر کو تبدیل کرنے کا ہے، سی سی پی او پر تنقید جائز طور پر کی جا رہی ہے۔ منگل کو ایوان بالا میں لاہور واقعہ پر اظہار خیال کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف سینیٹر راجہ ظفر الحق نے کہا کہ سوچنا چاہیے کہ اس طرح کے دلخراش واقعات کیوں ہو رہے ہیں اور یہ واقعات بڑھتے جا رہے ہیں۔ انہوں نے تجویز دی کہ سب سے اہم تھانہ کلچر کو بدلنا ہے، سی سی پی پر تنقید جائز طور پر کی جا رہی ہے، پولیس کو اطلاع کے باوجود پولیس تو نہیں پہنچی لیکن مجرم پہنچ گئے۔

(جاری ہے)

تھانے میں شکایت کرنے والے کو ہی پولیس تنگ کرتی ہے، عدالتوں سے بھی مجرم بری ہو جاتے ہیں، سیاسی مقدمات میں تو ضمانتیں نہیں ہوتیں لیکن سنگین مقدمات کے ملزم ضمانت پر رہا ہو جاتے ہیں، ججز کی تقرری کا طریقہ کار اطمینان بخش نہیں ہے، ارکان پارلیمان جو جزز تقرری کمیٹی کے رکن ہوتے ہیں، ان کے لئے اعتراض کرنے کا طریقہ کار پیچیدہ ہے۔ انہوں نے تجویز دی کہ کمیٹی آف دی ہول کا اجلاس بلایا جائے جس میں پولیس کے نیک نام افسر اور ریٹائرڈ یا حاضر سروس ججز بلا کر مشاورت کی جائے، حخومت خود کو سی سی پی او سے منسلک نہ کرے، اس کے ریمارکس پر اسے سزا دی جائے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More