The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

فیصل کیس میں سہولت کارکا دوروزہ جسمانی ریمانڈمنظور

9

پشاور۔16 ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 16 ستمبر2020ء) انسداد دہشت گردی پشاور کی خصوصی عدالت نے فیصل عرف خالد کیس میں گرفتار تیسرے ملزم کو تفتیش کے لیے دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالہ کردیا ہے،دوسری جانب عدالت نے جونیئر وکیل طفیل ضیاء کی ضمانت درخواست پر سماعت بھی 26ستمبر تک ملتوی کردی ہے،گزشتہ روز پولیس نے ملزم کو جج کے سامنے پیش کیا تو اس دوران پولیس نے عدالت کو بتایاکہ ملزم وسیع اللہ ساکن سفید ڈھیری پر الزام ہے کہ وہ توہین رسالت کے کیس میں نامزد ملزم طاہر قادیانی کو عدالت میں قتل کرنے والے نوجوان فیصل عرف خالد کے سہولت کار تھے اور فیصل عرف خالد کے لیے پستول لانے کے الزام میں گرفتار دوسرے ملزم جونیئر وکیل طفیل ضیاء کے ساتھ ٹیلیفونک رابطے میںتھے جس کے بعد ملزم کو گرفتار کرکے وکیل طفیل ضیاء کی نشاندہی پر نامزد کردیا گیا ہے گزشتہ روز پولیس نے ملزم کی عبوری ضمانت خارج ہونے کے بعد پولیس نے ملزم کو حراست میں لیا ہے لہذا ملزم سے مزید تفتیش کی ضرورت ہے، عدالت نے پولیس کی جانب سے جسمانی ریمانڈ کی درخواست منظور کرتے ہوئے ملزم کو تفتیش کے لیے دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالہ کردیا۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ 29جولائی کو فیصل عرف خالد نے توہین رسلات کیس میں نامزد ملزم طاہر نسیم احمد قادیانی کو عدالت کے اندر قتل کیا تھا جس میں پولیس نے پستول لانے والے جونیئر وکیل طفیل ضیاء پہلے ہی گرفتار ہوچکے ہیں تاہم تیسر ے سہولت کار ملزم وسیع اللہ کو بھی پولیس نے عبوری ضمانت خارج ہونے کے بعد گزشتہ روز گرفتار کر لیا ہے اس وقت تینوں ملزمان گرفتار ہیں تاہم گرفتار جونیئر وکیل نے ضمانت درخواست انسداد دہشت گردی میں دائر کردی ہے جس میں مزید سماعت 26ستمبر پر ہوگی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More