The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

شوگر ملز میں سٹاکس کی فیزیکل ویریفیکیشن کی ہدایت ،ڈکلیئرڈ سٹاک سے زائد چینی مارکیٹ میں فروخت کردی جائیگی ‘ پنجاب حکومت … ایک ماہ شوگر ملوں کو چینی کے سٹاک صرف گھریلو … مزید

11

ایک ماہ شوگر ملوں کو چینی کے سٹاک صرف گھریلو صارفین کیلئے فروخت کی اجازت ہوگی ،آٹے کی کمیابی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے
سہولت بازاروں کے قیام، سرکاری گندم کا کوٹہ بیچنے والی فلور ملوں کیخلاف کارروائی کیلئے ہدایات جاری کردی گئیں،چیف سیکرٹری کی زیر صدارت ہنگامی اجلاس

ہفتہ اکتوبر
19:17

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – این این آئی۔ 17 اکتوبر2020ء) پنجاب حکومت نے ذخیرہ اندوزی اوراشیائے خوردونوش کی سرکاری نرخوں کے مطابق فروخت کو یقینی بنانے کے لئے سخت احکامات جاری کر دئیے ،شوگر ملز میں سٹاکس کی فیزیکل ویریفیکیشن کی جائے اورڈکلیئرڈ سٹاک سے زائد چینی کو مارکیٹ میں فروخت کر دیا جائے گا ،ایک ماہ شوگر ملوں کو چینی کے سٹاک صرف گھریلو صارفین کیلئے فروخت کی اجازت ہوگی جبکہ سٹاک کو کمرشل استعمال کیلئے فروخت نہیں کیا جا سکے گا۔چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں پرائس کنٹرول سے متعلق ہنگامی اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، محکموں کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز،کمشنر لاہورڈویژن کی شرکت جبکہ تمام ڈویژنل کمشنرز،آر پی اوز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

(جاری ہے)

اجلاس میںوزیر اعظم کی ہدایت پر پنجاب حکومت نے سہولت بازاروں کے قیام، سرکاری گندم کا کوٹہ بیچنے والی فلور ملوں کیخلاف کارروائی کیلئے ہدایات جاری کردی گئیں۔

اجلاس میں مانیٹرنگ کیلئے خصوصی سیل قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔چیف سیکرٹری نے ہدایت کی کہ اشیا ئے ضروریہ کی مقررہ نرخوں پر دستیابی کیلئے تحصیل کی سطح پر سہولت بازاروں کو مکمل فعال کیا جائے،اربوں روپے کی سبسڈی کے باوجودآٹے کی کمیابی انتظامی افسران کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ انہوںنے کہا کہ کارکردگی کا روزانہ کی بنیاد پر جائزہ لیا جائے گا،کوتاہی پر ڈپٹی کمشنرجوابدہ ہوگا۔ چیف سیکرٹری نے ہدایت کی کہ شوگر ملز میں سٹاکس کی فیزیکل ویریفیکیشن کی جائے،ڈکلیئرڈ سٹاک سے زائد چینی کو مارکیٹ میں فروخت کر دیا جائے۔،ایک ماہ شوگر ملوں کو چینی کے سٹاک صرف گھریلو صارفین کیلئے فروخت کی اجازت ہوگی،ایک ماہ چینی کے سٹاک کو کمرشل استعمال کیلئے فروخت نہیں کیا جا سکے گا۔ چیف سیکرٹری نے محکموں کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز کو پرائس کنٹرول اقدامات کی نگرانی کرنے سے متعلق ذمہ داریاں بھی تفویض کیں۔چیف سیکرٹری نے کہا کہ دکانوں پر ریٹ لسٹیں نمایاں طور پر آویزں نہ ہونے کی صورت میں متعلقہ اسسٹنٹ کمشنر ذمہ دار ہوگا،سہولت بازاروں کیساتھ ساتھ اوپن مارکیٹ میں بھی اشیا ئے خورونوش کی قیمتوں، طلب اور رسد پر کڑی نظر رکھی جائے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More