The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن سالانہ انتخابات پولنگ 29 اکتوبر کو ہو گی، … صدر کی سیٹ پر خیبر پختونخوا سے امیدوار کاغذات نامزدگی جمع کرا سکیں گے

4

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 17 ستمبر2020ء) سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات کی سرگرمیاں کورونا وائرس وباء کے باعث تاحال زور نہ پکڑ سکیں، نہ ہی روائتی گہما گہمی شروع ہو سکی۔سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے آئندہ ماہ سالانہ انتخابات میں اس مرتبہ صدر کا عہدہ خیبر پختونخوا کے حصہ میں آگیا۔ واضح رہے کہ کل پاکستان بنیاد پر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات میں ہر سال صدارتی عہدہ ترتیب کے ساتھ کسی نہ کسی صوبے کے پاس چلا جاتا ہے، اس مرتبہ صدر کی سیٹ پر صرف خیبر پختونخوا سے صدارتی امیدوار کاغذات نامزدگی جمع کرسکیں گے۔ اس بار بھی سپریم کورٹ بار کے سالانہ انتخابات میں صدارتی امیدواروں میں ون ٹو ون مقابلہ ہوگا، عاصمہ جہانگیر گروپ کے صدارتی امیدوار لالہ لطیف آفریدی کا مقابلہ حامد خان گروپ کے عبدالستار خان سے ہوگا۔

(جاری ہے)

دونوں صدارتی امیدواروں کا تعلق خیبر پختونخوا سے ہے، عاصمہ جہانگیر گروپ کے سیکرٹری کے امیدوار رانا احمد شہزاد فاروق کا مقابلہ عمر سہیل سلیمی سے ہوگا۔

سیکرٹری سپریم کورٹ کے امیدوار عامر سہیل سلیم کو حامد خان گروپ کی حمایت حاصل ہے۔ عاصمہ جہانگیر گروپ کے نائب صدر کے امیدوار ارشد باجوہ کا مقابلہ حامد خان گروپ کے یونس نول سے ہوگا۔اس مرتبہ سپریم کورٹ بار الیکشن مہم کورونا وائرس وباء کے باعث تاحال سست روی کا شکار ہے۔ سپریم کورٹ بار کے الیکشن میں تین ہزار تین سو سے زائد وکلاء ووٹ کاسٹ کریں گے۔ سپریم کورٹ بار کے الیکشن کیلئے سب سے زیادہ ووٹرز کی تعداد لاہور میں ہے۔ سپریم کورٹ بار الیکشن کیلئے لاہور ، کراچی، پشاور، کوئٹہ رجسٹری سمیت ملک بھر میں پولنگ سٹیشن قائم ہوں گے۔ سپریم کورٹ بار کے سالانہ انتخابات 29 اکتوبر کو ہوں گے تاہم29 اکتوبر کو عید میلاد النبی ہونے کی صورت میں پولنگ30 اکتوبر کو ہوگی۔جاری شیڈول کے مطابق جمعرات کو وکلاء کی لائف ممبر شپ کے حصول اور واجبات جمع کرانے کی آخری تاریخ تھی۔اہل ووٹرز کی ابتدائی فہرست کل بروز ہفتہ آویزاں کی جائے گی، ووٹرز کی ابتدائی فہرست پر اعتراضات 23ستمبر جبکہ اعتراضات پر فیصلے 25 ستمبر کو ہوں گے ، ووٹرز کی حتمی فہرست 26 ستمبر کو جاری کی جائے گی۔28 ستمبر سے 3 اکتوبر تک امیدوار کاغذات نامزدگی جمع کرا سکیں گے۔ امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی سکروٹنی ،،کاغذات نامزدگی پر اعتراضات اور فیصلے 6 اکتوبر کو ہوں گے۔امیدواروں کی ابتدائی فہرست سات اکتوبر کو جاری کی جائے گی۔امیدواروں کے کاغذات نامزدگی منظور یا مسترد کرنے کے خلاف پاکستان بار کونسل میں اپیل دس اکتوبر تک دائرکی جا سکیں گی۔پاکستان بار کونسل ان اپیلوں پر 17 اکتوبر تک فیصلے کرے گی۔سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے امیدوار 17 اکتوبر تک کاغذات نامزدگی واپس لے سکیں گے۔امیدواروں کی حتمی فہرست 19 اکتوبر کو شائع کی جائے گی۔ پولنگ 29اکتوبر صبح ساڑھے آٹھ بجے سے شام 5 بجے تک ہوگی تاہم 29 اکتوبر کو عید میلاد النبی کی صورت میں 30 اکتوبر کو پولنگ ہوگی۔سپریم کورٹ بار الیکشن کے نتائج کا سرکاری اعلان 4 نومبر کو کیا جائے گا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More