The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

سعودی عرب میں نوجوان سمندر میں ڈوب گیا … اللیث سے سوشل سائنسز کی ڈگری حاصل کرنے والا نوجوان تفریح کے لیے ساحل سمندر آیا تھا

5

اللیث سے سوشل سائنسز کی ڈگری حاصل کرنے والا نوجوان تفریح کے لیے ساحل سمندر آیا تھا

Muhammad Irfan محمد عرفان
بدھ ستمبر
17:43

سعودی عرب میں نوجوان سمندر میں ڈوب گیا
ریاض (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔16 ستمبر2020ء) سعودی عرب میں ایک انتہائی افسوس ناک واقعہ پیش آیا ہے جس کے نتیجے میں ایک نوجوان زندگی کی باز ہار گیا ہے۔ سبق ویب سائٹ کے مطابق اللیث کے سمندری علاقے میں ایک نوجوان تفریح کے دوران سمندر میں ڈُوب کر جاں بحق ہو گیا، جس کی میت کی تلاش جاری ہے۔ سرحدی فورس کی جانب سے بتایا گیا ہے اللیث کمشنری کا ایک نوجوان تفریح کے لیے ساحل سمندر پر آیا۔ سمندری لہروں سے لطف اٹھانے کے دوران وہ انجانے میں زیادہ گہرے پانی میں چلا گیا۔ جس کے بعد سمندر کی بے رحم لہروں نے اسے اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ موقع پر موجود عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ وہ مغرب کی نماز کے وقت ساحل سمندر پر موجود تھے ، جب انہوں نے ایک نوجوان کو سمندر کی لہروں میں غائب ہوتے دیکھا۔

(جاری ہے)

بدقسمتی سے وہ نوجوان ان سے خاصادُور تھا، جس کی وجہ سے وہ اس کی مدد نہ کر سکے۔

اس واقعے کی فوری اطلاع سرحدی فورس کو دی گئی۔ امدادی ٹیم نے نوجوان کی لاش کی تلاش شروع کر دی ہے۔ بدقسمت نوجوان کی عمر 30 سال بتائی گئی ہے جو اللیث کے ایک کالج سے سوشل سائنسز میں ڈگری حاصل کر چکا تھا۔ واضح رہے کہ چند ماہ قبل سعودی عرب کا ایک نوجوان صحافی سمندر میں ڈوب جانے سے جاں بحق ہو گیا تھا۔ نوجوان صحافی الحکمی کی عمر صرف 22 سال تھی، تاہم اس نے بہت چھوٹی عمر میں ہی اپنی صحافیانہ صلاحیتوں کا لوہا منوا لیا تھا۔ اخبار کے مطابق الحکمی کی موت گزشتہ روزجازان کے ایک ساحلی علاقے میں شام کے وقت سمندر میں ڈْوب جانے سے ہوئی۔ الحکمی نے اپنی موت سے چند گھنٹے قبل ہی سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو پوسٹ کی تھی جس میں جازان کے ایک علاقے کو طوفانی بارشوں کے باعث سیلابی ریلے میں گھرا ہوا دکھایا گیا تھا۔ اور پھرچند گھنٹوں بعد خود اس کی موت سوشل میڈیا پر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More