The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

,جمعیت علما اسلام ضلع کوئٹہ کے رہنمائوں کا بلیلی کسٹم پر چیکنگ کے نام پر گھنٹوں گھنٹوں عوام کی تذلیل پر سخت برہمی کا اظہار

25

اتوار ستمبر
21:00

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – آن لائن۔ 13 ستمبر2020ء) جمعیت علما اسلام ضلع کوئٹہ کے امیر مولانا عبد الرحمن رفیق سینئرنائب امیر مولانا خورشید احمد سیکرٹری جنرل حاجی بشیر احمد کاکڑ مولانا محمد ہاشم خیشکی مولانا محمد ایوب مفتی عبد السلام رئیسانی مفتی عبدالغفور مدنی حافظ شبیر احمد مدنی حاجی محمد شاہ لالا حاجی ولی محمد بڑیچ ظفر اللہ خان کاکڑ سیکرٹری مالیات میر سرفراز شاہوانی سالار حافظ مجیب الرحمن ملاخیل میر فاروق لانگو چوہدری محمد عاطف مولانا محمد طاہر توحیدی مفتی نیک محمد فاروقی ملک عبداللہ سلیمان خیل اور دیگر نے کہا ہے بلیلی کسٹم پر چیکنگ کے نام پر گھنٹوں گھنٹوں عوام کی تذلیل پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بلیلی چیک پوسٹ پر عوام کی تذلیل کا سلسلہ فوری طور پر بند کیاجائے ٹریفک کی بندش کے باعث بیمار اور ضعیف العمر بوڑھے اور خواتین مریضوں کی حالت پر رحم کرتے ہوئے حکام نوٹس لے انہوں نے کہا کہ روزانہ بلیلی کسٹم و چیک پوسٹ پر ہزاروں گاڑیاں شدید ٹریفک جام میں پھنس کر مطلوبہ منزل تک پہنچنے میں تاخیر کا شکار ہوجاتی ہیں عوام محسوس کررہے ہیں کہ صرف اور صرف ہماری تزلیل ہورہی ہے اور حکام کو بخوبی علم ہے کہ کونسے مافیاز غیر قانونی دھندوں میں ملوث ہیں جبکہ چمن پشین لورلائی و دیگر علاقوں سے کوئٹہ جانے والے مسافر، جس میں خواتین بچے بوڑھے و مختلف بیماری میں مبتلا لوگ جو علاج کے لیے کوئٹہ آرہے ہیں بلیلی کسٹم و چیک پوسٹ پر گھنٹوں گھنٹوں ٹریفک جام کی وجہ سے شدید تکلیف سے دوچار کرنا قابل مذمت عمل ہے انہوں نے کہا کہ سرکار عوام کو ریلیف دینے کے بجائے سہولت دینے کے بجائے تکلیف دے رہی ہے انہوں نے کہا کہ کسٹم حکام کا جوکام ہے اس پر توجہ دیں عام مسافر گاڑیوں کو گھنٹوں خوار کرنے کا سلسلہ ترک کیاجائے چمن سے کوئٹہ تک درجنوں چیک پوسٹوں کے باوجود عوام کو اذیت سے دوچارکرنا سمجھ سے بالاتر ہے انہوں نے ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس مسئلے کا سوموٹو نوٹس لیتے ہوئے عوام کو عذاب سے نجات دلائیں

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More