The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

بی جے پی حکومت نے نہتے کشمیریوں پر مظالم کی تمام حدیں پار کر لی ہیں: تحریک وحدت اسلامی

14

سرینگر۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 13 ستمبر2020ء) غیر قانونی طور پر بھارت کے یر قبضہ جموں و کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کی اکائی تحریک وحدت اسلامی نے نہتے کشمیریوں پر بڑھتے ہوئے بھارتی مظالم پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق تحریک وحدت اسلامی کا ایک اہم اجلاس تنظیم کے نائب چیئرمین واجد علی کی صدارت میں مرکزی دفتر بڈگام میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ نریندر مودی کی سربراہی میں قائم بھارتیہ جنتاپارٹی کی فسطائی حکومت کی کشمیر پالیسی جبر و ستم کے سوا کچھ نہیں۔ اجلاس کے شرکاء نے کہا کہ بی جے پی حکومت نے نہتے کشمیریوں پر مظالم کی تمام حدیں پار کر لی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیرعالمی سطح پر تسلیم شدہ ایک متنازعہ خطہ ہے جس کے ایک بڑے حصے پر بھارت نے بندوق کی نوک پر غاصبانہ قبضہ جما رکھا ہے۔

(جاری ہے)

اجلاس میں کہا گیا کہ بھارت کشمیر میں عالمی قوانین اور اصول و ضوابط کی دھجیاں اڑا رہا ہے۔ اجلاس میں کہاگیا کہ نریندر مودی کی ہندو توا حکومت نے کشمیریوں کے خلاف جو ظالمانہ طرز عمل اختیار کر رکھا ہے اس سے اسکورسوائی اور ناکامی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔ اجلاس کے شرکا ء نے کہا کہ محرم الحرام کے دوران عزا دادوں نے حسینیت کے راستے پر چلتے ہوئے جس جانداراندازسے بھارت کے خلاف آواز اٹھائی وہ لائق تحسین ہے۔ اجلاس میں کہا گیا کہ تحریک وحدت اسلامی کے عہدیداران کی تقریری کیلئے تنظیم کے آئین کے مطابق ہر دو برس بعدانتخابات ہوتے ہیں تاہم رواں برس کورونا وائرس کی وبا کے باعث انتخابات نہیں کرائے جاسکے۔ اجلاس کے شرکاء نے اتفاق رائے سے انتخابات 4اکتوبر کو کرانے کا فیصلہ کیا جن میں چیئرمین، نائب چیرمین، جنرل سیکریٹری اور دیگر عہدیداروں کو چنا جائے گا۔اجلاس میں دیگر لوگوں کے علاوہ خادم حسین، علی محمد، محمدمقبول ماگامی، گلشن عباس، شاہین عباس، شاہد علی، شبیر احمد ڈار، امتیاز بہار، قاسم علی اور فیاض احمد نے شرکت کی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More