The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

بنگلہ دیش، مردہ قرار دے کر قبر میں دفناتے وقت بچہ زندہ ہوگیا … لیڈی ڈاکٹر نے قبل از وقت پیدائس پر بچے کو مردہ قرار دیتے ہوئے دفنانے کے لیے والد کے حوالے کیا ، قبر کھودنے … مزید

23

لیڈی ڈاکٹر نے قبل از وقت پیدائس پر بچے کو مردہ قرار دیتے ہوئے دفنانے کے لیے والد کے حوالے کیا ، قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولود کو اس میں اتارا جانے لگا تو اچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا

Sajid Ali ساجد علی
ہفتہ اکتوبر
15:56

بنگلہ دیش، مردہ قرار دے کر قبر میں دفناتے وقت بچہ زندہ ہوگیا
ڈھاکا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اکتوبر2020ء) بنگلہ دیش کے شہر ڈھاکا میں مردہ قرار دے کر قبر میں دفناتے وقت نومولود بچہ زندہ ہوگیا ، بچے نے آنکھیں کھولیں اور چیخ کر رونے لگا ، والدین کی خوشی کا کوئی ٹھکانا نہ رہا۔ اس حوالے سے عالمی خبر رساں ادارے کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ بنگلہ دیشی دارالحکومت ڈھاکا میں 7 ماہ کی حاملہ خاتون شاہین اختر نے قبل از وقت بچے کو جنم دیا ، جسے لیڈی ڈاکٹر کی جانب سے مردہ قرار دیا گیا ، اور دستانوں والے ڈبے میں رکھ کر والد کو دیا کہ اس کو قریبی قبرستان میں دفنا دیا جائے ، تاہم قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولود کو اس میں اتارا جانے لگا تو اچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا ، جس پر باپ بچے کو لے کر دوبارہ اسی ہسپتال گیا تاہم جنرل وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو دوسرے ہسپتال لے جانا پڑا جہاں زچہ وبچہ کی طبیعت خطرے سے باہر بتائی گئی۔

(جاری ہے)

ایک اور خبر کے مطابق کراچی میں تیسری منزل سے پھینکی گئی بچی معجزانہ طور پر بچ گئی، ابتدائی اطلاعات میں بچی کو جاں بحق قرار دیا گیا تھا، لیکن بعد میں پتہ چلا کہ معجزانہ طور پر زندہ ہے، پولیس کہنا ہے کہ تیسری منزل سے پھینکی گئی بچی معجزانہ طور پر بچ گئی ہے ، اس سے قبل بتایا گیا تھا کہ نامعلوم افراد نے نومولود بچی کو تیسری منزل سے نیچے پھینک دیا تھا، پولیس نے ایک مرد اور عورت کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں افسوسناک اور دلخراش واقعہ پیش آیا، جس سے انسان کی روح تک کانپ جاتی ہے، جہاں منظور کالونی میں نامعلوم افراد نے نولومود بچی کو تیسری منزل سے نیچے پھینک دیا، بچی کو نیچے گرتے شدید چوٹیں آئیں، ریسکیو کی ٹیمیں فوری جائے واقعہ پر پہنچ گئیں، بچی کوزخمی اور تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ بچی کے راستے میں ہی دم توڑنے کی اطلاعات موصول ہوئیں ، بتایا گیا ہے کہ پولیس نے موقعے پر پہنچ کر تحقیقات کا آغاز کردیا، پولیس نے منظور کالونی آفریدی روڈ کے قریب ایک مرد اور عورت کو حراست میں لیا، کیوں کہ شبہ ہے کہ ان دونوں نے بچی کو عمارت کی تیسری منزل سے نیچے پھینکا تھا جو کہ معجزانہ طور پر زندہ بچ گئی ۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More