The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

بلوچستان مثبت سوچ اور مثبت رویے کے لوگوں کا صوبہ ہے، یہاں کے لوگ پر خلوص، محنت کش اور مہمان نواز ہیں،رہنماء پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن

13

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – آن لائن۔ 18 اکتوبر2020ء) پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کے رہنماوں نے کہا ہے کہ بلوچستان مثبت سوچ اور مثبت رویے کے لوگوں کا صوبہ ہے۔ یہاں کے لوگ پر خلوص، محنت کش اور مہمان نواز ہے۔ سکاوٹس اسسٹنٹ لیڈر کورس ایک گریجوکیشن کورس ہے سب سے اچھا لیڈر وہ ہوتا ہے جو مشکل حالات میں چیلنجز کا سامنا کرستکا ہو۔ دور دراز علاقوں تک سکاوٹنگ نیٹ ورک پھیلانے کیلئے کوششیں کررہے ہی۔ بلوچستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کی میزبانی میں پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام 7 روزہ قومی سکاوٹس اسسٹنٹ لیڈر کورس کے اختتامی تقرہب سے پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کے سینئر ڈپٹی چیف کمشنر و ڈائریکٹر تعلیم بلوچستان نظام الدین مینگل اور سیکرٹری پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن صابر حسین نیازی اور دیگر نے خطاب کیا۔

(جاری ہے)

اس 7 روزہ تربیتی کورس میں پاکستان کے تمام صوبوں سمیت 10 سکاوٹس ایسوسی ایشنز کے سکاوٹس لیڈرز نے شرکت کیں۔ اس موقع کورس کے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کے سینئر ڈپٹی چیف کمشنر و ڈائریکٹر تعلیم بلوچستان نظام الدین مینگل نے کہا کہ بلوچستان پیار کرنیوالوں کی سرزمین ہے۔ اپنی شناخت اور ثقافت سے ایک منفرد صوبہ ہے۔ بلوچستان کے لوگ مثبت سوچ اور رویہ رکھتے ہیں۔ یہاں کا جغرافیہ بھی ملک کے باقی صوبوں سے منفرد ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورس میں شرکا کی شرکت حوصلہ افزا تھی۔ یہ ایک عام کورس نہیں بلکہ سکاوٹنگ کی گریجویشن کورس ہے۔ کورس کے بعد آپ لوگوں کو ذمہ داریوں اور چیلنجز کا سامنا کرنا پڑے گا۔ تربیت پانا چیلنج نہیں بلکہ اسے دوسروں پہنچانا اور منتقل کرنا سب سے بڑا چیلنج ہے۔ سب سے اچھا لیڈر وہی ہوتا جو چیلنجز کا سامنا کرسکتا ہو۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان سمیت پورے ملک میں بوائز اور گرلز سکاوٹنگ کی ریویو کی ضرورت ہے۔ ہماری ذمہ
داری ہے کہ سکاوٹنگ کی ضروریات اور چیلنجز کیلئے اقدامات اٹھائیں۔ بلوچستان کے دور دراز علاقوں تک سکاوٹنگ نیٹ ورک پھیلانے کیلئے اقدامات اٹھاریے ہی۔ سیکرٹری پاکستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن صابر حسین نیازی نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ کورس کے شرکا جس امید کے ساتھ ملک بھر سے آئے تھے واپسی پر پرامید ہی جائیں گے۔ جو کچھ بھی سیکھا ہے اسے دوسروں تک پہنچانے میں اپنا کردار ادا کرے۔ تاکہ سیکھنے اور سکھانے کے عمل کو جاری رکھا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ آپ سب لوگ مبارکباد کے مستحق ہے جنہوں نے اس اہم کورس میں شرکت کیں اور ملک بھر سے اکٹھے ہوکر ایک دوسرے سے اپنے مسائل اور تجربات شریک کئے۔ کورس کے آخر میں شرکا میں اسناد تقسیم کئے گئے اور مہمانوں کو اعزازات دیئے گئے جبکہ سندھ بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کی جانب سے مہمانوں میں سندھی اجرک کے خصوصی تحائف بھی تقسیم کئے گئے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More