The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

اگر جنسی زیادتی کے مجرمان کو سخت سزائیں نہ دی گئیں تو پاکستان کو خیرباد کہہ دوں گی … ہمارے معاشرے میں عورتوں کی بجائے مردوں کو تمیز سکھانے کی ضرورت ہے، یہاں صرف عورتیں … مزید

21

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 ستمبر2020ء) اداکارہ سارہ خان کا کہنا ہے کہ اگر جنسی زیادتی کے مجرمان کو سخت سزائیں نہ دی گئیں تو پاکستان کو خیرباد کہہ دوں گی، ہمارے معاشرے میں عورتوں کی بجائے مردوں کو تمیز سکھانے کی ضرورت ہے، یہاں صرف عورتیں ہی نہیں بلکہ بچوں کی عزت بھی محفوظ نہیں ہے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور موٹروے پر خاتون کو بچوں کو اجتماعی جنسی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے اور جنسی زیادتی کے کیسز میں خوفناک حد تک اضافہ ہونے کے بعد کراچی میں شوبز شخصیات کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا گیا۔ احتجاجی مظاہرے کے شرکاء نے مطالبہ کیا کہ جنسی زیادتی میں ملوث ملزمان کو سخت سے سخت سزائیں دے کر عبرت کا نشان بنایا جائے۔ اس دوران اداکارہ سارہ خان کی جانب سے بھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا کہ اگر جنسی زیادتی جیسے گھناونے جرم میں ملوث مجرمان کو سخت سزائیں نہ دی گئیں تو انہیں افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ وہ اس ملک کو چھوڑ جائیں گی۔

(جاری ہے)


سارہ خان کہتی ہیں کہ جنسی زیادتی کے بڑھتے واقعات کو روکنے کیلئے ضروری ہے کہ عورتوں کی بجائے مردوں کی تربیت اور انہیں تمیز سکھانے پر توجہ دی جائے۔ سارہ خان کا کہنا ہے کہ اس ملک میں صرف خواتین ہی نہیں بلکہ بچوں تک کی عزت محفوظ نہیں ہے۔ واضح رہے کہ سانحہ گجر پورہ کے بعد سے ملک بھر کی عوام سراپا احتجاج ہے۔ ملک کے ہر طبقے سے تعلق رکھنے والے افراد کی جانب سے متفقہ طور پر مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ جنسی زیادتی کے جرم میں ملوث ملزمان کو سرعام پھانسی دی جائے۔ ان ملزمان کو نامرد کرنے کی سزا دینے کا مطالبہ بھی کیا جا رہا ہے۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے بھی اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنسی زیادتی کے مجرمان کی آختہ کاری کر دینی چاہیئے، انہیں پھانسی کی  سزا دی جائے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More