The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

اپوزیشن کا حق ہے کہ وہ عوامی مسائل اجاگر کرنے کے لئے جلسے جلوس کرے اور پارلیمنٹ میں آواز اٹھائے ،سعیداحمد ہاشمی … حکومتی پالیسی اور عوامی مسائل پر تنقید ضروری کی جائے … مزید

11

حکومتی پالیسی اور عوامی مسائل پر تنقید ضروری کی جائے لیکن حکومت مخالف سیاست میں ملکی سلامتی کے معاملات اورریاستی اداروں کا تقدس ملحوظ خاطر رکھیں،بانی بلوچستان عوامی پارٹی

اتوار اکتوبر
18:25

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – این این آئی۔ 18 اکتوبر2020ء) بلوچستان عوامی پارٹی کے بانی سعید احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ اپوزیشن کا حق ہے کہ وہ عوامی مسائل اجاگر کرنے کے لئے جلسے جلوس کرے اور پارلیمنٹ میں آواز اٹھائے حکومتی پالیسی اور عوامی مسائل پر تنقید ضروری کی جائے لیکن حکومت مخالف سیاست میں ملکی سلامتی کے معاملات اورریاستی اداروں کا تقدس ملحوظ خاطر رکھیں،ایسے بیانات سے اجتناب کرنا چاہئے جس سے جمہوریت ، ملکی سالمیت کے اداروں کو نقصان جبکہ اندورنی و بیرونی دشمن کو فائدہ پہنچ رہا ہے ، ملکی سیاست کو دور اندیشی عوامی مسائل کے حل کے لئے غیر معمولی افہام و تفہیم اور سیاسی بصیرت کی ضرورت ہے حکومت اور اپوزیشن ٹکراؤکی بجائے میثاق قومی یکجہتی پر توجہ دیں۔ یہ بات انہوں نے اتوار کو صحافیوں کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہی اس موقع پر بی اے پی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات چوہدری شبیر احمد بھی موجود تھے۔

(جاری ہے)

سعید احمد ہاشمی نے کہا کہ جلسے جلوس کرنا اپوزیشن کا حق ہے اپوزیشن کا فرض ہے کہ وہ عوامی مسائل کو اجاگر اور حکومتی پالیسی پر جلسے جلوسوں اور پارلیمنٹ میں تنقید کرے لیکن اس بیانیے کی ایک حد متعین ہونی چاہیے اپوزیشن کے جذباتی بیانات سے ملک میں جمہوریت کو تقویت کی بجائے نقصان پہنچ رہا ہے اپوزیشن کو سیاسی معاملات میں جمہوری تقاضوں کو مدنظر رکھنا چاہیے آج ملک کے خلاف دشمن بیرونی نہیں بلکہ اندونی محاذ پر کاربند ہے ایسی صورتحال میں ملکی سلامتی ،سالمیت کا دفاع کرنے والے ادارے بیرونی دشمنوں کے ساتھ اندورنی محاذ پر بھی دفاع کر رہے ہیں لیکن اگر سیاستدان ریاستی اداروں اور ریاست کے ستونوں کی اخلاقی حمایت کی بجائے انہیں نقصان پہنچائیں گے تو اسکا فائدہ صرف ملک دشمن عناصر کو پہنچے گا۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں طویل تگ و دو کے بعد جمہوری نظام استحکا م کی جانب گامزن ہے ایسے میں ٹکراؤ کی صورتحال پیدا کرنے سے نہ صرف جمہوریت کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے بلکہ اس سے ہمارے ازلی دشمن بھی فائدہ اٹھا سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک بار پھر اندرونی اور بیرونی خطرات میں گھر چکا ہے دہشتگردی کے پے درپے واقعات رونما ہورہے ہیں جن میں فورسز کے کئی جوان شہید ہوئے بیرونی دشمن عوام میں تفریق پیداکرنا چاہتا ہے اس صورتحال پر قابو پانے کے لئے ہمیں میثاق قومی یکجہتی کی ضرورت ہے جسکے لئے حکومت اور اپوزیشن کو اپنے بیانیے میں میانہ روی اور نرمی لانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ سیاسی جماعتوں کے لئے مسائل اجاگر کرنے کا بہترین فورم ہے جہاں عوامی مفادات کے لئے آواز اٹھانے کے ساتھ حکومت پر تنقید بھی کی جاسکتی ہے عوام اب باشعور ہوچکی ہے وہ ذاتی معاملات پر کسی کا ساتھ دینے کے لئے تیار نہیں ہے۔

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More