The Pakistan Post
Daily News Publishing Portal

اوکاڑہ: نواح میں بااثر سکول ٹیچرنے اپنے بیٹوں اور درجنوں مسلح افرادکی مدد سے چادروچار دیواری کا تقدس پامال کرکے خاتون اور اسکے بچوں کو تشددکا نشانہ بنایا … برہنہ کردیا … مزید

14

برہنہ کردیا
اوراسکے مکان پر قبضہ جمالیا پولیس نے سکول ٹیچر سے بھاری نذرانہ وصول کرکے کارروائی کرنے انکار کردیا

منگل ستمبر
19:49

اوکاڑہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – آن لائن۔ 15 ستمبر2020ء) اوکاڑہ کے نواح میں بااثر سکول ٹیچرنے اپنے بیٹوں اور درجنوں مسلح افرادکی مدد سے چادروچار دیواری کا تقدس پامال کرکے خاتون اور اسکے بچوں کو تشددکا نشانہ بنایا اسے برہنہ کردیا اوراسکے مکان پر قبضہ جمالیا پولیس نے سکول ٹیچر سے بھاری نذرانہ وصول کرکے کارروائی کرنے انکار کردیا مظلوم عورت کئی روز سے انصاف کیلئے دربدر کی ٹھوکریں کھارہی ہے وزیراعلیٰ پنجاب وڈی پی او اوکاڑہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیاانصاف نہ ملنے پر خود سوزی کی دھمکی دے دی تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ سکول موضع اراضی وداوہ کے ٹیچروبااثر شخصیت خضرحیات نے اپنے دو بیٹوں اطہرحیات،فیصل حیات،اپنی بیوی بیٹیوں،محمد شریف قصائی،افتخار سمیت دیگر درجنوں افراد کے ساتھ آتشین اسلحہ سے مسلح ہوکرنواحی آبادی ابراہیم چک نمبر32جی ڈی کی رہائشی اللہ معافی کے گھر پر حملہ کردیا اسے تشدد کرکے برہنہ کردیااسکے معصوم بچوں کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا اور اسکے مکان پر قبضہ جمالیا اللہ معافی زخمی حالت میں جب پولیس تھانہ گوگیرہ پہنچی تو ماسٹر خضرحیات نے اپنے اثر رسوخ اور بھاری نذرانہ دیکر اپنے خلاف کسی قسم کی کارروائی نہ ہونے دی مظلوم خاتون پچھلے چھ روز سے انصاف کیلئے دربدر کی ٹھوکریں کھا رہی ہے مگر اسے کی دادرسی نہ ہوپا رہی ہے اس نے وزیراعلیٰ پنجاب اور ڈی پی او اوکاڑہ سے ملزمان کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کردیا ہے اللہ معافی نے خبردار کیا ہے کہ اگر اسے انصاف نہ ملا تو وہ اعلیٰ حکام کے دفترکے سامنے خود سوزی کر لے گی

متعلقہ عنوان :

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More